Translation and Brief Elucidation

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: " ایک مسلمان کے دوسرے مسلمان پر چھ (خاص) حق ہیں"۔ پوچھا گیا : وہ کون سے ہیں یا رسول اللہ ؟ آپ نے فرمایا : (۱) جب ملاقات ہو تو اسے سلام کرے، (۲) جب وہ مدعو کرے تو اس کی دعوت قبول کرے (بشرطیکہ کوئی شرعی محذور اور مانع نہ ہو)، (۳) جب وہ نصیحت یا مخلصانہ مشورے کا طالب ہو تو اس سے دریغ نہ کرے، (۴) جب اس کو چھینک آئے اور وہ الحمد للہ کہے تو (یرحمک اللہ کے ساتھ) جواب دے، (۵) جب بیمار ہو تو اس کی عیادت کرے اور (۶) جب وہ انتقال کر جائے تو اس کے جنازے کے ساتھ جائے ۔"

از ڈاکٹر اسرار احمد، ترتیب و تدوین سید برہان علی ۔ خالد محمود خضر

ڈاکٹر اسرار احمد ؒ (م : ۲۰۱۰ء) کی قرآنی خدمات میں "بیان القرآن" ایک اہم حیثیت رکھتی ہے۔ ۱۹۸۴ء سے نماز تراویح کے دوران ڈاکٹر صاحب نے قرآن مجید کا ترجمہ اور مختصر تفسیر بیان کرنا شروع کیا۔ ڈاکٹر صاحب کے اس دورہ قرآن کو دنیا بھر میں مقبولیت حاصل ہوئی۔

جمہوری طرز حکومت کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس میں بندوں کو گنا کرتے ہیں تولا نہیں کرتے۔ گویا جمہوریت میں فیصلہ کن حیثیت عددی کثرت کو حاصل ہوتی ہے اور اس میں اصل شئے جس کے حصول کی کوشش کی جاتی ہے وہ یہ ہے کہ عوام کی "اکثریت" کو ہر جائز و ناجائز اور صحیح و غیر صحیح معاملے میں بطورِ دلیل اور بطورِ فیصلہ کن عامل قبول کیا جائے ۔

۱۔ نام مجلّہ : حکمت بالغہ ستمبر ۲۰۱۲ء، یاجوج ماجوج نمبر، مدیر : انجینئر مختار فاروقی۔ ۲۔ طریق القرآن (سورۃ الفاتحہ و سورۃ البقرۃ کی مختصر تشریح)، مصنف : محمد منیر احمد۔ ۳۔ سہ ماہی "التفسیر" کراچی کا خصوصی شمارہ (شخصیات نمبر)، مدیر اعلٰی : پروفیسر ڈاکٹر محمد شکیل اوج۔ ۴۔ اسلامی معاشرہ کے لازمی خدوخال، مصنف: شیخ الحدیث مولانا سمیع الحق۔ ۵۔ نام مجلّہ : اشاریہ ماہنامہ "شمس الاسلام" بھیرہ،

افادات: حافظ احمد یارؒ، ترتیب و تدوین: لطف الرحمٰن خان

کرنسی نوٹوں کی تاریخ اور ان کے کے تدریجی مراحل کا جائزہ لینے کے بعد یہ بات کھل کر سامنے آتی ہے کہ ابتدائی مراحل میں کاغذی نوٹ کی حیثیت بلا شک و شبہ سند اور وثیقہ کی تھی لیکن عرصہ دراز سے یہ کاغذی نوٹ مستقل ثمن کی حیثیت اختیار کر چکے ہیں۔

اجتہاد کے لغوی معنی کسی مقصد کو حاصل کرنے کی انتہائی کوشش کرنا، زحمت برداشت کرنا، مشقت اٹھانا ہیں۔ اصطلاحاً اجتہاد عبارت ہے اس کوشش سے جو کسی قضیے یا حکم شرعی کے بارے میں بحدِ امکان ذاتی رائے (ظنِ غالب) قائم کرنے کے لیے کی جائے ۔

According to a published paper of Dr. Rafi-ud-Din, referred to earlier in this monograph, the period from the creation of Adam down to the present day can be taken generally as the period of conceptual or ideological evolution. However, in all humility and modesty, I beg to differ from him here and dare to present a more analytical, detailed and deeper view of humanity’s evolutionary process. I believe that the first stage of evolution consisted of purely physico-chemical changes and mutations. And the second level or stage of evolution, i.e. the biological evolutionary process, has already passed through two stages of evolution; while the third stage is presently under way.